بھارت میں انتہا پسند ہندو کا روزے دار مسلم خاتون پر تشدد

کرناٹک(آن لائن نیوزاردو پاور) بھارت میں انتہا پسند ہندو سرکاری ملازم نے دفتر میں کام کرنے والی روزے دار مسلمان خاتون کو تشدد کا نشانہ بنا ڈالا جس کی ویڈیو سامنے آگئی۔
بھارت میں اخلاقیات کا جنازہ نکل چکا ہے، آئے روز جنسی زیادتی اور ہندو انتہا پسندی کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں یہاں نہ عورتوں کا احترام ہےاور نہ ہی کسی کی عزت محفوظ

Follow
ANI ✔ @ANI_news
#CAUGHTONCAM: Sindhanur City Municipal Council employee kicks a woman colleague, in Karnataka’s Raichur. Accused arrested, case registered.
8:24 PM – 12 Jun 2017
73 73 Retweets 62 62 likes
Twitter Ads info and privacy
مسلم خاتون کے ساتھ بدسلوکی کا واقعہ ریاست کرناٹک کے ضلع رائچر کے شہر سندھانور میں پیش آیا جہاں بلدیہ میں کام کرنے والے ہندو ملازم شاراناپا نے روزے دار خاتون نسرین کو زوردار لاتیں رسید کیں جس کی سی سی ٹی وی ویڈیو بھی سامنے آگئی۔
نسرین نے پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کرائی کہ شاراناپا نے دیر سے آنے کا الزام لگاکر اسے روزے کی حالت میں تشدد کا نشانہ بنایا۔ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ملزم کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا ہے۔
بلدیاتی انتظامیہ کے مطابق نسرین مستقل جب کہ شاراناپا عارضی ملازم ہے، جسے نوکری سے برخواست کردیا گیا ہے۔ حکام کے مطابق جس روز یہ واقعہ پیش آیا اس روز دفتر کی چھٹی تھی تاہم کام زیادہ ہونے کی وجہ سے دونوں ملازمین کو طلب کیا گیاتھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں