صرف ایک انگلی سے چلنے والا جدید ترین کی بورڈ ماؤس تیار

امریکی کمپنی ایسی ڈیجیٹل ایلفابٹ نیڈیئم سینس ڈیوائس تیار کررہیے جو دکھنے میں ایک ماؤس کے برابر ہے لیکن اسے صرف ایک انگلی کے ذریعے نہ صرف ماؤس کے طور پر استعمال کیا جا سکتا ہے بلکہ مکمل ٹائپنگ بھی کی جا سکتی ہے۔
تیار ہو جائیں مستقبل کے کی بورڈ اور ماؤس کے لیے جو کہ صرف ایک ہی چھوٹی سی ڈیوائس پر مشتمل ہے اور یہ ڈیوائس جیسے نیڈیئم سینس (Nydeum Sense) کا نام دیا گیا ہے بغیر کسی تار کے بھی کام کرے گی۔
ہم تیزی سے مجازی حقیقت یعنی ورچوئل ریئلٹی کی دنیا کی جانب بڑھ رہے ہیں اس دنیا میں عام ماؤس اور کی بورڈ کی کوئی گنجائش موجود نہیں ہے۔ اس لیے ڈیجیٹل ایلفابٹ نامی کمپنی عوامی مدد سے ایک ایسی ڈیوائس تیار کر رہی ہے جو دیکھنے میں ماؤس جتنی ہے لیکن اس میں کی بورڈ اور ماؤس دونوں کی خصوصیات موجود ہیں۔
بیٹری سے چلنے والی یہ ڈیوائس اسمارٹ فون، ٹیبلٹ، اسمارٹ واچ اور کمپیوٹرز کے ساتھ باآسانی استعمال کی جا سکتی ہے۔ اسے استعمال کرنے کے لیے کسی سطح پر رکھنے کی بھی ضرورت نہیں پڑتی۔ اس میں ٹائپنگ کا انداز بھی بدل دیا گیا ہے کیونکہ اس پر بٹنز موجود نہیں بلکہ ہر لفظ لکھنے کے لیے مختلف تراتیب رکھی گئی ہیں کہ اس پر کسی طرف انگلی پھیریں تو کون سا حرف ٹائپ ہو۔
مکمل طور پر وائرلیس ہونے کی وجہ سے اس کے ذریعے باآسانی اسکرین سے دور بیٹھ کر بھی ٹائپ کیا جا سکتا ہے۔ اس بنانے والی کمپنی کا کہنا ہے کہ عام ٹائپنگ کی طرح اس کی ٹائپنگ سیکھنے کے بعد باآسانی تیز رفتاری سے ٹائپ کیا جا سکتا ہے۔ عام صارفین سے لے کر کمپیوٹر گیمنگ کے شوقین افراد تک سبھی کے لیے یہ ڈیوائس یکساں مفید ثابت ہو گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.