فلم ’ سلطان ‘ کی شوٹنگ کے دوران سلمان خان کو حقیقت میں لاتیں اور گھونسے پڑے: علی عباس ظفر

ممبئی (مانیٹرنگ ڈیسک) مداحوں کو سلمان خان کی نئے آنے والی فلم ” سلطان “ کا بے صبری سے انتظار ہے لیکن پردے کے پیچھے سے خبریں آرہی ہیں کہ فلم کی شوٹنگ کے دوران یہ فلم سلمان خان پر بہت بھاری پڑی اور ان کو حقیقت میں لاتوں اور گھونسوں کا سامنا کرنا پڑا۔
فلم سلطان کے ڈائریکٹر علی عباس ظفر کا کہنا تھا کہ فلم کی شوٹنگ کے دوران سپر سٹار سلمان خان کو کثیر تعداد میں لاتیں اور گھونسے پڑے جبکہ انہیں بہت بار اٹھا کر پٹخا بھی گیا۔ نیوز ویب سائٹ ڈی این اے کو انٹرویو دیتے ہوئے علی عباس ظفر نے فلم میں پیش آنے والی دشواریوں کے بارے میں بتاتے ہوئے اس خوف کا بھی اظہار کیا کہ مداحوں کو فلم سے بہت سی توقعات ہیں اور پتا نہیں ہم اتنی محنت کے باوجود ان کی امیدوں پر پورا اترنے میں کامیاب بھی ہوں گے یا نہیں ۔
انہوں نے سلام خان کو سلام پیش کرتے ہوئے کہا کہ سپر سٹار نے بغیر کسی وقفہ کے اپنے جسم میں بہت سی تبدیلیاں کیں حالانکہ 50 سال کی عمر میں ایسا کرنا بہت ہی مشکل کام ہے کیونکہ سلمان خان کو پہلے اپنے جسم کو ایک ریسلر کے طور پر بہت ہی ہلکا اور پھرتیلا کرنا پڑا جبکہ پہلوانی کیلئے انہیں اپنا جسم بھاری کرنا پڑا۔
علی عباس ظفر کا کہنا تھا کہ سلمان خان نے روزانہ تین گھنٹے تک ٹریننگ کی جس کے دوران انہیں اٹھا اٹھا کر پھینکا گیا جبکہ انہیں لاتیں اور گھونسے بھی سہنے پڑے لیکن صرف تین مہینے بعد ہی سلمان خان نے اپنی ٹریننگ کا حق ادا کردیا اور وہ بالکل ایک پروفیشنل کی طرح لاتیں اور گھونسے برساتے نظر آئے ۔
واضح رہے کہ سلمان خان کی فلم ” سلطان “ سپر سٹار کی پسندیدہ تاریخ عیدالفطر پر ریلیز ہونے جا رہی ہے جس میں وہ ایک پہلوان کے روپ میں نظر آئیں گے جبکہ انوشکا شرما، رندیپ ہوڈا اور امیت سادھ بھی اس فلم میں نظر آئیں گے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں