اسلام آباد میں ’سیف سٹی‘ منصوبے کا افتتاح

اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے وفاقی دارالحکومت میں ’سیف سٹی‘ منصوبے کا افتتاح کردیا۔

اسلام آباد میں ’سیف سٹی‘ منصوبے کے افتتاح کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ پورے ملک میں اپنی نوعیت کا یہ پہلا منصوبہ ہے، جس پر 12 کروڑ 60 لاکھ ڈالر خرچ ہوئے۔

انہوں نے کہا کہ منصوبے کے تحت اسلام آباد کی سیکیورٹی کو یقینی بنانا مقصد ہے، یہ اصل پولیسنگ ہے جس کے تحت اسلام آباد کے کونے کونے کو کیمرے سے دیکھا جاسکتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ منصوبہ ایک بہت انوکھا کام ہے، یہاں کام کرنے والوں کے لیے مراعات میں اضافہ کریں گے، جبکہ اگر تعینات اہلکار صحیح طریقے سے ڈیوٹی نہیں دیں گے تو اس منصوبےکا کوئی فائدہ نہیں۔

اس موقع پر ملک میں شناختی کارڈ کی تصدیق کے حوالے سے وزیر داخلہ نے کہا کہ شناختی کارڈ کی تصدیق میں کسی کو تکلیف نہیں ہوگی، جبکہ جعلی شناختی کارڈ رکھنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

ہندوستانی جاسوس کے حوالے سے چوہدری نثار علی خان کا کہنا تھا کہ کلبھوشن یادیو خاص مقاصد لے کر پاکستان آیا تھا، جبکہ ہندوستان کو کلبھوشن تک رسائی نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

ریڈیو پاکستان کی رپورٹ کے مطابق سیف سٹی منصوبے کے تحت شہر کے مختلف مقامات پر ایک ہزار 950 کیمرے نصب کیے گئے ہیں، جبکہ یہ منصوبہ امن وامان کی صورتحال اور وفاقی دارالحکومت میں ٹریفک کے نظام کو بہتر بنانے میں معاون ثابت ہوگا۔

اس منصوبے کا کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر سیکٹر ایچ 11 میں ایک بم پروف عمارت میں قائم کیا گیا ہے جہاں سے اہم عمارتوں، داخلی اور خارجی مقامات، سڑکوں، کاروباری مراکز اور شہر کے رہائشی علاقوں کی نگرانی کی جائے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.