توہین عدالت : طلال چودھری کو دوسرا وکیل مقرر کرنے کیلئے پیر تک مہلت

اسلام آباد: سپریم کورٹ میں توہین عدالت کیس میں وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چوہدری کو دوسرا وکیل مقرر کرنے کے لیے19 فروری تک کی مہلت دے دی۔
اسلام سپریم کورٹ میں جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں جسٹس مقبول باقر اور جسٹس فیصل عرب پر مشتمل 3 رکنی بنچ نے طلال چوہدری کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت کی۔
سماعت کے آغاز میں طلال چوہدری عدالت میں پیش ہوئے اور آگاہ کیا کہ جس وکیل کو انہوں نے کیس کے لیے مقرر کیا تھا وہ اس دنیا میں نہیں رہیں، لہذا دوسرا وکیل مقرر کرنے کے لیے انہیں وقت دیا جائے۔
جس کے بعد سپریم کورٹ نے طلال چودھری کو دوسرا وکیل مقرر کرنے کے لیے19 فروری تک کا وقت دیتے ہوئے کیس کی سماعت ملتوی کردی۔
واضح رہے یکم فروری کو چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چوہدری کو عدلیہ مخالف تقریر توہین عدالت کا نوٹس جاری کیا تھا۔
یاد رہے طلال چودھری نے گذشتہ ماہ جڑانوالہ کے جلسے میں مبینہ طور پر ججز کے خلاف توہین آمیز تقریر کی تھی، تاہم اس سے قبل بھی پاناما کیس کے سلسلے میں شریف خاندان کے مالی اثاثوں کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی اور عدلیہ کو تنقید کا نشانہ بنا چکے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.